کووڈ-19 ویکسین کیسے کام کرتی ہے | How the COVID-19 vaccine works

کووڈ19- ویکسین مفت اور رضاکارانہ ہے اور یہ نیوزی لینڈ میں 12 سال یا اس سے زائد عمر کے ہر شخص کے لئے دستیاب ہے۔ بکنگ کروانے کے لئے Book My Vaccine پر جائيں یا کووڈ ویکسینیشن ہیلتھ لائن کو کال کریں۔

COVID-19 ویکسین مفت اور رضاکارانہ (اس کا لگوانا یا نہ لگوانا آپ پر منحصر) ہے اور یہ نیوزی لینڈ میں 12 سال یا اس سے زیادہ عمر کے ہر فرد کے لئے دستیاب ہے۔

ویکسین لگوا کر آپ اپنی حفاظت کرتے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ آپ اپنے خاندان، دوستوں اور کمیونٹی کو COVID-19 منتقل کرنے کے خطرے کو کم کرتے ہیں۔

ایک دفعہ جب آپ کو ویکسین کی مکمل خوراکیں لگ جائيں تو آپ کے لئے شدید بیمار ہونے کا امکان بہت کم ہوجاتا ہے۔

ویکسین آپ کے مدافعتی نظام کو وائرس کی پہچان کرنا اور اس سے لڑنا سکھاتی ہے۔

یہاں آپ کو اس بارے میں اہم معلومات ملیں گی کہ ویکسین کیسے کام کرتی ہے۔

mRNA ویکسینیں

Pfizer ویکسین ایک mRNA ویکسین ہے۔ اس میں SARS-CoV-2 (COVID-19) وائرس کے ایک اہم حصے کا جینیاتی کوڈ موجود ہے جسے 'اسپائک پروٹین' کہا جاتا ہے۔ اسپائک پروٹین سے مراد وائرس کی سطح پر موجود چھوٹے چھوٹے ابھار ہیں۔

جب آپ کو ویکسین لگ جاتی ہے تو آپ کا جسم جینیاتی کوڈ کو پڑھتا ہے اور اسپائک پروٹین کی کاپیاں بنا لیتا ہے۔

آپ کا مدافعتی نظام ان اسپائیک پروٹینز کو دریافت کرتا ہے اور یہ سیکھتا ہے کہ COVID-19 کو کیسے پہچاننا ہے اور اس سے کیسے لڑنا ہے۔ وہ جانتا ہے کہ اسے وائرس پر حملہ کرکے آپ کے جسم میں پھیلنے سے بچانے کی ضرورت ہے۔

اس کے بعد ویکسین کا جینیاتی کوڈ بہت جلدی اور بآسانی توڑ پھوڑ کر آپ کے جسم سے نکال دیا جاتا ہے۔ 

mRNA ویکسینوں کے متعلق جاننے کی اہم چیزیں

ویکسین سے آپ کو COVID-19 نہیں ہو سکتا

mRNA ویکسینوں میں کوئی بھی ایسا وائرس نہیں ہوتا ہے جس سے COVID-19 ہو سکتا ہے، یا ان میں کوئی اور زندہ، مردہ یا غیر فعال وائرس نہیں ہوتا۔

ویکسینیں آپ کے ڈی این اے کو متاثر نہیں کرتیں

یہ آپ کے ڈی این اے یا جینز پر اثر انداز نہیں ہوتیں اور نہ ہی ان کے ساتھ کوئی تعامل کرتی ہیں۔ mRNA ویکسینیں کبھی بھی خلیے کے مرکز میں داخل نہیں ہوتیں، جہاں کہ ہمارا ڈی این اے موجود ہوتا ہے۔

mRNA ویکسینیں کئی دہائیوں سے تیار کی جا رہی ہیں۔

mRNA ویکسینیں ایک بہت بڑے پیمانے پر بین الاقوامی تعاون کے ذریعے تیار کی گئی ہيں۔

محققین نے کئی دہائیوں تک mRNA ویکسینوں کا مطالعہ کیا ہے اور ان پر کام کیا ہے۔ اس میں فلو، Zika، rabies اور cytomegalovirus (CMV) کے خلاف ویکسینوں کے مطالعے شامل ہیں۔

سائنسدانوں نے ماضی کی کرونا وائرس انفیکشنز جیسے SARS اور MERS پر بھی تحقیق کی ہے۔ ایک دفعہ COVID-19 کا باعث بننے والے کرونا وائرس کی شناخت کرلینے کے بعد سائنس دانوں نے ٹیکنالوجی کو تیزی سے COVID-19 کے لئے ڈھال لیا۔

اگرچہ یہ نسبتا" ایک نئی ٹیکنالوجی ہے لیکن یہ ویکسین حفاظت کے حوالے سے جانچ اور ضوابط کے تمام تقاضوں پر پوری اتری ہے۔

اس میں ویکسین کی افادیت اور حفاظت کے اظہار میں مدد کے لئے بین الاقوامی کلینیکل ٹرائلز شامل ہیں۔ Pfizer ویکسین دنیا بھر میں استعمال کی جارہی ہے اور اس کے مؤثر اور محفوظ ہونے کے حوالے سے اس کی مسلسل اور تفصیلی نگرانی کی جارہی ہے۔

Last updated: