کووڈ-19 ویکسینیں: تیاری، منظوری اور حفاظت | COVID-19 vaccines: development, approval and safety

کووڈ19- ویکسین مفت اور رضاکارانہ ہے اور یہ نیوزی لینڈ میں 12 سال یا اس سے زائد عمر کے ہر شخص کے لئے دستیاب ہے۔ بکنگ کروانے کے لئے Book My Vaccine پر جائيں یا کووڈ ویکسینیشن ہیلتھ لائن کو کال کریں۔

COVID-19 ویکسینیں تیزی سے اور محفوظ طور پر کیسے تیار کی گئی ہيں

ویکسین کی تیاری کے لئے سائنس دانوں اور حکومتوں کے مابین اس سطح کا عالمی تعاون کبھی نہیں دیکھا گیا۔ اس سے دنیا بھر میں ویکسین کی تیاری، کلینیکل ٹرائلز اور منظوری کی رفتار میں تیزی آئی ہے۔

اگرچہ ویکسینیں بہت تیزی سے تیار کی گئی ہیں لیکن اس دوران ضروری عوامل پر عملدرآمد کے لئے کوئی چھوٹا راستہ اختیار نہیں کیا گیا اور نہ ہی ان کے محفوظ ہونے پر کسی طرح کا کوئی سمجھوتہ کیا گیا ہے۔

محقّقین کو دوسرے کورونا وائرسوں اور ان کی ویکسینیں بنانے کے بارے میں اپنے علم کے استعمال سے ایک اچھے آغاز میں مدد ملی تھی۔

COVID-19 کے بارے میں دنیا بھر میں دلچسپی اور تشویش کی وجہ سے کلینیکل ٹرائلز میں بھی معمول سے زیادہ تعداد میں رضاکاروں نے شمولیت اختیار کی تھی۔ کچھ کلینیکل ٹرائلز ایک کے بعد ایک کی بجائے اکٹھے ہی کئے جا سکتے تھے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ سائنس دان بہت ہی کم وقت میں تیزی سے یہ معلوم کرسکتے تھے کہ آیا یہ ویکسین مؤثر تھی- اس کام میں عام حالات میں کئی مہینے، حتی کہ سال تک لگ سکتے تھے۔

بڑے بڑے مینوفیکچرنگ پلانٹ تیار کئے گئے ہیں، لہذا ویکسینیں تیزی سے اور بڑے پیمانے پر تیار کی جاسکتی ہیں جو کہ اس سے پہلے ممکن نہیں تھا۔

نیوزی لینڈ میں ویکسین کا جائزہ اور منظوری

Medsafe نیوزی لینڈ میں ادویات کی حفاظتی اتھارٹی ہے۔ یہ ویکسینوں سمیت تمام نئی ادویات کی درخواستوں کا جائزہ لیتی ہے تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ وہ بین الاقوامی معیار اور مقامی ضروریات پر پورا اترتی ہیں۔

Medsafe اتھارٹی Aotearoa میں ویکسین استعمال کرنے کی منظوری صرف اس وقت ہی دیتی ہے جب وہ اس بات پر مطمئن ہو کہ ویکسین حفاظت، افادیت اور معیار کے سخت معیاروں پر پورا اترتی ہے۔ یہ وہی عمل ہے جو دوسری ادویات کا جائزہ لینے کے لئے استعمال ہوتا ہے، جیسے فلو ویکسین۔

منظوری دینے کے لئے کوئی چھوٹا راستہ اختیار نہیں کیا گیا۔

Pfizer ویکسین کو دنیا بھر میں لاکھوں افراد نے کامیابی کے ساتھ استعمال کیا ہے۔ محفوظ ہونے کے حوالے سے اس کی مسلسل نگرانی جاری ہے۔

Pfizer ویکسین کے ٹرائلز کیسے کئے گئے تھے

کلینیکل ٹرائلز سے پتہ چلا ہے کہ یہ ویکسین ہرعمر، جنس، رنگ، نسل اور طبّی مسائل سے دوچار لوگوں میں مؤثر ہے۔

مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ تقریبا 95% افراد، جنہوں نے ویکسین کی دونوں خوراکیں وصول کی ہیں، ان کو COVID-19 علامات کے خلاف تحفّظ حاصل ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ ایک بار جب آپ کو مکمل ویکسین لگ جائے تو آپ کے شدید بیمار ہونے کا امکان بہت کم ہوجاتا ہے۔

تمام کلینیکل ٹرائلز میں Pfizer ویکسین کا تقریبا 44,000 شرکاء پر مطالعہ کیا گیا تھا۔ ان میں سے آدھے افراد کو ویکسین لگائی گئی تھی اور باقی آدھے افراد کو نمک ملا ہوا بےضرر مائع (saline placebo) لگایا گیا تھا۔ شرکاء میں کئی مختلف نسل، عمر، جنس اور صحت کے مسائل سے دوچار افراد شامل تھے۔

Pfizer ویکسین جانچ کے 3 مراحل سے گزری ہے:

  • پہلے اور دوسرے مرحلے  میں ایک چھوٹی آبادی میں ویکسین کی مختلف خوارکوں کی سطح کی حفاظت اور امیونوجنسیٹی (ہر خوراک کے بعد مدافعتی ردّعمل) کا جائزہ لیا گیا۔
  • دوسرے اور تیسرے مرحلے میں ایک بڑی آبادی میں، 21 دن کے وقفے سے، منتخب کردہ سطح کی 2 خوراکوں کے بعد علامتوں کے ساتھ ظاہر ہونے والے COVID-19 کے خلاف ویکسین کی حفاظت اور افادیت کا جائزہ لیا گیا۔

Pfizer ویکسین کی طویل مدّتی افادیت اور حفاظت کو سمجھنے کے لئے کلینیکل ٹرائلز میں حصہ لینے والے افراد پر ان کی ویکسین کی دوسری خوراک لگنے کے بعد مزید 2 سال تک نظر رکھی جا رہی ہے۔